برطانیہ میں کنوارہ پن بحال کرنے کا آپریشن مقبول ہونے لگا کیونکہ۔۔۔ برطانیہ کا شرمناک چہرہ سامنے آگیا

96

لندن(سٹوری ٹوڈے) جدید طبی ٹیکنالوجی کی بدولت خواتین مصنوعی حسن تو حاصل کر ہی رہی تھیں لیکن اب انہوں نے ایک ایسی چیز بھی حاصل کرنی شروع کر دی ہے کہ سن کر مرد حیرت سے آنکھیں جھپکنا بھول جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق برطانیہ میں خواتین نے ڈاکٹروں کی مدد سے اپنا ’کنوارپن‘ واپس حاصل شروع کر دیا ہے۔ ایسی خواتین جو مردوں کے ساتھ جسمانی تعلق کی وجہ سے اپنا کنوار پن کھوچکی ہیں بڑی تعداد میں برطانوی ہسپتالوں کا رخ کر رہی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ہسپتالوں نے 2007ءسے 2017ءکے درمیان 109خواتین کا مصنوعی پردہ بکارت لگانے کا اعتراف کیا ہے تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ تعداد اس سے کہیں زیادہ ہو سکتی ہے کیونکہ ڈاکٹر تاحال اسے تسلیم کرنے سے احتراض برت رہے ہیں۔ لندن کی لوئس وین ویلڈ نامی ماہر کا کہنا ہے کہ ”پردہ¿ بکارت کی بحالی کا آپریشن صرف تیس منٹ کا ہوتا ہے اور اس پر 1ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 1لاکھ 56ہزار روپے) لاگت آتی ہے۔ اس میں پھٹے ہوئے پردے کو ٹانکے لگا کر دوبارہ ٹھیک کر دیا جاتا ہے یا نیا پردہ لگا دیا جاتا ہے جس سے خاتون دوبارہ سے کنواری ہو جاتی ہے۔“ لوئس کے مطابق یہ آپریشن کرانے والی لڑکیاں اپنے کیے پر پشیمان ہوتی ہیں اور شادی سے پہلے یہ آپریشن کرواتی ہیں تاکہ ان کے شوہر انہیں کنوارا سمجھیں، کچھ خواتین مذہبی نقطہ نظر سے بھی یہ آپریشن کروا رہی ہیں۔“

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.