کم عمری میں کنوارہ پن گنوانے کے زندگی پر انتہائی حیران کن اثرات سائنسدانوں نے بتادئی

4

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)مردوخواتین کم عمری میں کنوار پن گنوا دیں تو اس کے ان کی زندگی پر کیااثرات مرتب ہوتے ہیں؟ سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں اس سوال کا واضح جواب دے دیا ہے۔ امریکہ کے نیشنل سنٹر فار بائیوٹیکنالوجی انفارمیشن کے سائنسدانوں نے اپنی تحقیق کے نتائج میں بتایا ہے کہ جو لوگ کم عمری میں کنوار پن گنوا دیتے ہیں ان کو بعدازاں جنسی صحت کے حوالے سے سنگین مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ایسے مردوں کو آگے چل کر عضو مخصوصہ کی ایستادگی کا مسئلہ درپیش آتا ہے اور جنسی عمل ان کے لیے تشفی بخش نہیں رہتا۔ ان لوگوں کو کچھ اخلاقی بگاڑ بھی لاحق ہو جاتے ہیں۔ ایسے لوگ جنسی عمل سے پہلے منشیات اور جنسی طاقت کی گولیاں استعمال کرنے کے عادی ہو جاتے ہیں اور ان کے جنسی پارٹنرز بھی بہت زیادہ ہوتے ہیں جس کی وجہ سے ان کے جنسی عمل سے پھیلنے والی بیماریوں ایڈز وغیرہ میں مبتلا ہونے کے امکانات بھی زیادہ ہوتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے اس تحقیق میں 1996ءمیں کیے گئے قومی جنسی صحت سروے کے اعدادوشمار کا تجزیہ کیا اور نتائج مرتب کیے۔ اس تجزئیے میں کم عمری میں یا زیادہ عمر میں جا کر کنوار پن گنوانے اور شادی سے پہلے یا شادی کے بعد کنوار پن گنوانے جیسے پہلوﺅں کو مدنظر رکھا گیا۔ نتائج میں سائنسدانوں نے بتایا کہ ”زیادہ عمر میں جا کر کنوار پن گنوانے والوں کے لیے بھی اس کے کچھ منفی اثرات ثابت ہوئے تاہم وہ کم عمری میں کنوار پن گنوانے والوں کی نسبت انتہائی کم تھے۔ وہ لوگ جو شادی کے بعد کنوار پن گنواتے ہیں ان میں منفی اثرات نہ ہونے کے برابر تھے بلکہ تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ ایسے لوگوں کی ازدواجی زندگیاں دوسروں کی نسبت بہت زیادہ خوشگوار رہتی ہیں اور ان کے اپنے شریک حیات سے بے وفائی کرنے کے امکانات بہت کم ہوتے ہیں۔“

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.