صدارتی نظام سے متعلق خبریں مسترد،ناقص کارکردگی پر وزراءکو جانا ہوگا، وزیر اعظم نے کابینہ میں تبدیلی کا اشارہ دیدیا

3

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے صدارتی نظام سے متعلق خبروں کو مسترد کرتے ہوئے کہاہے کہ ناقص کارکردگی پر وزراءکو جانا پڑے گا ، صر ف کارکردگی دکھانے والے وزراءکابینہ میں موجود رہیں گے ۔

دنیا نیوز کے مطابق اسلام آباد میں سینئر صحافیوں سے ملاقات کے موقع پر عمران خان نے کہا کہ آنے والے دنوں میں وفاقی کابینہ میں مزید ردوبدل ہوگا۔ جو وزرا کارکردگی دکھائیں گے وہ رہیں گے، باقی کو جانا پڑے گا۔،جہاں جہاں سے بھی اچھے لوگ ملیں گے ان کا تقرر کروں گا۔غیر منتخب افراد کی کابینہ میں شمولیت سے متعلق سوال پر وزیراعظم نے کہا کہ میں نے کارکردگی دکھانی ہے، اس سے فرق نہیں پڑتا کہ کوئی منتخب ہے یا غیر منتخب، جہاں ماہر لوگ نہیں وہاں ٹیکنیکل ٹیم لا رہا ہوں۔ ٹیم میں تجربہ کار لوگوں کو استعمال کر رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اسد عمر تحریک انصاف کا قیمتی اثاثہ ہیں، وہ بہت جلد وفاقی کابینہ میں واپس آئیں گے، میں پیر کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں شریک ہونگا ۔
وزیر اعظم نے کا کہ اپوزیشن این این آر او کے لیے ہم پر دباو ڈال رہی ہے لیکن کسی کو بھی ہرگز ہرگز این آر او نہیں دیا جائے گا۔ ہم عدالتوں اور نیب کی آزادی پر یقین رکھتے ہیں، ماضی کے حکمرانوں کی طرح مرضی کے فیصلے کرانے کے لئے کوئی دباونہیں ڈالا جا رہا۔ ملک میں میرٹ کی دھجیاں اڑائی گئیں اسی وجہ سے موجودہ حالت کو پہنچے ہیں۔ عوام کی بہبود کے لئے قانون سازی میں اپوزیشن سے بھی مشاورت کریں گے۔ خواتین کی ترقی کے لیے اہم قانون سازی کی جارہی ہے۔ نئے قوانین سے عوام کو سستا اور فوری انصاف مہیا کیاجائیگا ۔انہوں نے کہا کہ صدارتی نظام کے حوالے سے کوئی سوچ ہی موجود نہیں، ایسی افواہوں کو مسترد کرتاہوں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.